Urdu

املی: جسے دیکھ کر منہ میں پانی آ جاتا ہے

املی (Tamarind ) ایک سدا بہار درخت ہے۔ اس پر نئے پتے اپریل مئی کے مہینے میں نکلتے ہیں۔ یہ درخت کبھی پتوں سے خالی نہیں ہوتا۔یہ ایک لمبی عمر پانے والا درخت ہے۔ جس کی اونچائی 12 سے 18 میٹر (40 سے 60 فٹ) تک ہوتی ہے۔ درخت پوری دھوپ میں اچھی طرح اگتا ہے۔

اس کا پھل بھورے رنگ کی پھلی کی شکل کا ہوتا ہے۔ جس کی لمبائی 12 سے 15 سینٹی میٹر (4 1/2 سے 6 انچ) ہوتی ہے۔ایک بھرپور جوان درخت ہر سال 175 کلوگرام پھل پیدا کر سکتا ہے۔اس کی پھلی میں گودا پایا جاتا ہے، جو املی کہلاتا ہے۔جبکہ اس کے اندر ایک بیج ہوتا ہے، جس سے تیل نکالا جاتا ہے۔

املی کا اصل وطن افریقہ ہے۔ تاہم یہ اب ایک عرصے سے برصغیر پاک و ہند میں کاشت کیا جا رہا ہے کہ بعض لوگ اس کا وطن برصغیر ہی بتلاتے ہیں۔ افریقہ میں یہ سوڈان، کیمرون، نائیجیریا، کینیا، زیمبیا، صومالیہ، تنزانیہ اور مالاوی اور دیگر ملحقہ علاقوں میں اگتا ہے۔ عرب میں یہ عمان میں پایا جاتا ہے۔

املی کی تاریخ کے حوالے سے بتایا ہے کہ ایک سے ڈیڑھ ہزار برس قبل یہ افریقہ سے جنوبی ایشیامیں پہنچا۔ جس کے بعد جنوب مشرقی ایشیا کے ممالک اور پھر تائیوان اور چین سے ہوتا ہوا اب شمالی آسٹریلیا اور دیگر ممالک میں بھی اگایا جاتا ہے۔تاہم اب ہندوستان املی کا سب سے بڑا پیدا کنندہ ملک ہے۔

Essential Life

کھانوں میں ذائقہ بڑھانے کیلئے املی ہر گھر کی ضرورت ہے۔حیدرآبادی گھرانوں میں تو املی کے بغیرکھانا ادھورا سمجھا جاتا ہے۔ کھانا چاہے جو بھی ہو چاہے وہ چٹنی ہو یا چاٹ املی کے بغیر اس کا تصور محال ہے۔املی صرف کھانوں کا ذائقہ دوبالا کرنے میں ہی استعمال نہیں ہوتی بلکہ یہ متعدد امراض کا شافی علاج بھی ہے۔ املی اور اس کا تیل اب ادویات اور صنعتی مقاصد میں بھی استعمال کی جا رہی ہے۔ اس کے نرم پتے سلاد کے طور پر استعمال کیے جاتے ہیں۔

املی میں پائے جانے والے کیمیائی اجزا:

املی میں موجود نامیاتی مرکبات کی بڑی تعدا د اسے ایک طاقتور اینٹی آکسیڈنٹ اور اینٹی انفلیمیشن بناتے ہیں۔املی میں وٹامن اے،بی، سی، اور وٹامن ای، فاسفورس، آئرن، کیلشیم،پوٹاشیم، میگنیز او رغذائی فائبر پائے جاتے ہیں۔

املی کے طبی فوائد:

ذیابیطیس میں مفید:
شوگر کے مریضوں کا سب سے بڑا اہم مسئلہ یہ ہوتا ہے کہ کاربوہائیڈریٹس جسم میں جاکر چینی یا چربی کی شکل میں جمع ہوجاتے ہیں جو شوگر کی سطح میں اضافہ کرتے ہیں۔ املی کا استعمال ذیابطیس کے اتار چڑھاؤ کو کنٹرول کرتا ہے۔

فولاد میں کمی:
انسانی جسم میں فولاد کی کمی کئی امراض کو جنم دیتی ہے۔املی جسم میں فولاد کی کمی دور کر تا ہے۔ جسمانی پٹھوں او را عضاء کی بہتر کارکردگی کیلئے املی مفید ثابت ہوتی ہے۔

Essential Life

معدہ کیلئے مفید:
املی میں وٹامنز اور منرلز کثیر مقدار میں پائے جاتے ہیں، جس کے استعمال سے صحت ٹھیک رہتی ہے اور معدہ بھی بہتر طریقے سے کام کرتا ہے۔ اس کے علاوہ املی کے استعمال سے انسان اپنے آپ کو بہت پرسکون محسوس کرتا ہے۔

نظام ہضم:
املی کااستعمال نظام ہضم کے لیے بہت اچھا ثابت ہوتا ہے کیونکہ اس میں فائبر کی وافر مقدار موجود ہوتی ہے اس لیے اس کا استعمال آنتوں کو تقویت دیتا ہے جس سے نظام انہضام بہتر طریقے سے کام کرتا ہے۔

دل کی صحت کیلئے بہترین:
املی میں پوٹاشیم پایا جاتا ہے جس کے باعث یہ بلڈ پریشر کو کم کرنے میں اہم کردار ادا کرتی ہے۔ املی میں موجود فائبر شریانوں سے ایل ڈی ایل کولیسٹرول کو ختم کرتاہے اور آنت کا کینسر نہیں ہونے دیتا۔اس کے علاوہ املی آنتوں میں بریکولیسٹرول کو کم اور اچھے کولیسٹرول کو بڑھاتی ہے۔ اس میں موجود وٹامن سی فری ریڈیکل کے خطرات کو کم کرتا ہے۔

Essential Life

بلڈ پریشر کنٹرول میں رکھے:
املی میں پوٹاشیم،آئرن، سیلینیم، کیلشیم، زنک اور کاپر کی وافر مقدار پائی جاتی ہے۔ اس میں موجود آئرن کی وجہ سے خون کے سرخ خلیے بنتے ہیں اور دیگر منرلز اور دھاتوں سے خون میں مادوں کی مقدار متوازن رہتی ہے اور بلڈ پریشر کنٹرول میں رہتا ہے۔

وزن میں کمی:
وزن میں کمی کے لیے املی کااستعمال بہت بہتر نتائج دیتا ہے۔ املی بھوک کم کرتی ہے اوریہ جسم میں فیٹ کو اسٹور نہیں ہونے دیتی۔ وزن میں کمی کے لیے املی سے بنائے گئے مشروبات بھی استعمال کیے جاتے ہیں۔

قوت مدافعت:
املی میں موجود وٹامن سی اور دیگر اینٹی آکسیڈنٹ انسانی جسم کے لیے بہترین دوا کا کام کرتے ہیں۔ املی مدافعتی نظام کو فروغ دے کر انسانی جسم کو بیماریوں سے بچا کر صحت مند زندگی کو یقینی بناتی ہے۔اس کے علاوہ اس میں موجود ٹارٹاریک ایسڈ ایک طاقتور انٹی آکسیڈینٹ کا کام کرتے ہوئے جسم سے فاسد مادوں کو باہر نکالتاہے۔

Essential Life

متلی اور قے:
املی کا استعمال طبیعت کو فرحت بخشتا ہے۔ یہ متلی اورقے کی شکایت دور کرکے غذا کو ہضم کرتی ہے۔ متلی ہونے کی صورت میں اگر املی کا شربت استعمال کیا جائے تو فائدہ ہوتا ہے۔

املی کے دیگر استعمال:

املی کے پھل کا گودا کھانے پینے کی اشیاء میں بکثرت استعمال ہوتا ہے۔ اس سے چٹنیاں اور مشروبات بنائے جاتے ہیں۔املی کی لکڑی فرنیچر، نقش و نگار اور لکڑی کے دیگر چھوٹے چھوٹے سامان بنانے کیلئے استعمال کی جاتی ہے۔املی کو بطور دھاتی پالش بھی استعمال کیا جاتا ہے۔پیتل، تانبااور کانسی کے برتن، مجسمے، لیمپ اور دیگر ڈیکوریشن کے سامان کو چمکانے کیلئے املی کا گودا پالش کیا جاتا ہے۔

احتیاط:
حاملہ یا دودھ پلانے والی خواتین کو املی کے زیادہ استعمال سے پرہیز کرنا چاہئے، بصورت دیگر اس کے منفی اثرات مرتب ہوسکتے ہیں۔املی کے استعمال سے بلڈ شوگر کم ہوجاتا ہے۔لہذا، کسی بھی سرجری سے تقریبا دو ہفتے قبل املی کے استعمال کو روکنا چاہئے۔ ہوسکتا ہے کہ اسکے استعمال سے سرجری کے بعد بلڈ شوگر پر کنٹرول کرنے میں مشکل آئے۔ املی خون کو پتلا کرنے والے خصوصیات پائی جاتی ہیں،اس لیے اگر آپ خون کو پتلا کرنے والی کسی دوا کا استعمال کررہے ہیں تو املی کا استعمال بالکل نہ کریں۔

نوٹ: یہ مضمون عام معلومات کے لیے ہے۔ قارئین اس حوالے سے اپنے معالج سے بھی ضرور مشورہ لیں۔

خالص اور معیاری مصنوعات خریدنے کیلئے کلک کریں

Related Posts