Urdu

ایک دانے میں چھپا ہے خوبصورتی اور صحت کا خزانہ

صدیوں سے بطور غذا استعمال ہونے والا میتھی دانہ ناصرف کھانے کا ذائقہ بڑھانے بلکہ مجموعی صحت کے لیے بھی انتہائی مفید ہے، میتھی دانے کو جہاں خواتین کی صحت اور ہارمونز کے متوازن رکھنے کے لیے انتہائی اہم جز قرار دیا جاتا ہے وہیں اس کے استعمال سے دِنوں میں گرتے بالوں کا علاج بھی ممکن ہے۔

غذائی ماہرین کے مطابق موسم سرما کی سبزی میتھی کو سرد اور خشک موسم میں زیادہ استعمال کیا جاتا ہے جبکہ میتھی دانے کا استعمال 12 مہینے کیا جا سکتا ہے، اس کا سفوف بنا کر نیم گرم پانی کے ساتھ  ناصرف کھانا مفید ہے بلکہ اس سے بنا قہوہ پینا بھی بے شمار فوائد کے حصول کا ذریعہ ہے۔

ماہرین غذائیت کے مطابق میتھی دانہ غذائیت، فائبر اور نیوٹرا سیوٹیکل اجزا سے بھرپور جز ہے، اس کے باقاعدگی سے استعمال کے نتیجے میں کئی موسمی بیماریوں سے نجات حاصل کی جا سکتی ہے۔

غذائی ماہرین کے مطابق میتھی دانے میں قدرتی طور پر اینٹی الرجی خصوصیات پائی جاتی ہیں، میتھی دانہ نزلہ، زکام، بے تحاشہ چھینکوں میں خصوصاً ڈسٹ الرجی کے شکار لوگوں اور سائنَس سے متاثرہ افراد کے لیے انتہائی مفید دوا قرار دی جاتی ہے جبکہ اس کا استعمال چہرے اور بالوں پر براہ راست کرنے  کے نتیجے میں خوبصورتی میں اضافہ بھی کیا جا سکتا ہے۔

جھڑتے بالوں کے لیے میتھی دانے سے بنا ہیئر ماسک

ماہرین جڑی بوٹیوں کے مطابق میتھی دانہ بالوں کی صحت کے لیے نہایت مفید غذا ہے، بال لمبے، گھنے، چمکدار اور ملائم بنانے کے لیے اس کے قہوے کا یا براہ راست استعمال بھی کیا جا سکتا ہے جبکہ جھڑتے بالوں کو فوراً روکنے اور بالوں کو مضبوط بنانے کے لیے میتھی دانے کا ہیئر ماسک بنا کر بھی لگایا جا سکتا ہے۔

میتھی دانے سے ہیئر ماسک بنانے کا طریقہ :

بالوں سے جُڑی کئی شکایات کا فوری علاج ایک آسان ترین ماسک کے ذریعے کیا جا سکتا ہے۔

میتھی دانے سے بنے ماسک کے لیے میتھی دانے کے 2 سے 3 چمچ رات بھر کےلیے سادہ پانی میں بگھو کر رکھ دیں، صبح اسے گرائینڈ کر کے اپنے بالوں کی جڑوں سے سِروں تک لیپ کر لیں، یہ ہیر ماسک زیادہ سے زیادہ صرف 25 سے 30 منٹ کے لیے لگائیں اور بعد ازاں بال اچھی طرح سے دھو لیں۔

اس عمل کو ہفتے میں صرف 1 سے 2 بار ہی دہرائیں، اس ماسک کے استعمال سے روکھے بالوں میں چند ہی دنوں میں جان آ جائے گی اور بال لمبے اور مضبوط ہونے لگیں گے۔

دانے سے بنا فیس ماسک

ہیر ماسک کے لیے گرائینڈ کیے گئے مرکب سے حسبِ ضرورت مرکب چہرے کے لیے ایک طرف نکال لیں، اب اس مرکب میں شہد، عرق گلاب اور ایلوویرا جیل بھی شامل کر لیں۔

اس فیس ماسک کو چہرے پر دن میں 15 یا 20 منٹ کے لیے لگائیں۔

اس عمل سے دِنوں میں چہرے سے ایکنی ، کیل مہاسوں کا خاتمہ اور داغ دھبے غائب ہو جائیں گے۔

احتیاط

جن خواتین اور مردوں کو ایکنی کی شکایت ہے وہ اس فیس ماسک میں شہد کے استعمال سے گریز کریں۔

شہد کے بجائے لیموں کا استعمال بھی کیا جا سکتا ہے۔

نوٹ: یہ مضمون عام معلومات کے لیے ہے۔ قارئین اس حوالے سے اپنے معالج سے بھی ضرور مشورہ لیں۔

خالص اور معیاری اشیاء خریدنے کیلئے کلک کریں: